میرا نام زینب ہے اورمجھے آم بہت پسند ہیں، معصومہ کا آخری ہوم ورک

لاہور: زیادتی کے بعد بہیمانہ انداز میں قتل ہونے والی 7 سالہ زینب کی اسکول کی کاپی پر لکھی تحریروں نے پڑھنے والی ہر آنکھ کو اشک بار کردیا۔

ننھی زینب کی کتابیں اور کاپیاں اسی طرح اس کے بیگ میں موجود ہیں، جن پر 4 جنوری تک کا ہوم ورک موجود ہے، یہ وہی روز ہے جب زینب اغواء ہوئی اور پھر کبھی لوٹ کر گھر واپس نہ آئی جب کہ زینب کی اسکول کی کاپیوں پر لکھی تحریروں نے پڑھنے والی ہر آنکھ کو اشک بار کردیا۔

اردو کے ہوم ورک میں زینب نے ’’ میری ذات ‘‘ پر ایک مضمون میں اپنا تعارف کراتے ہوئے لکھا کہ ’’میں ایک لڑکی ہوں، میرا نام زینب ہے، میرے والد کا نام امین ہے، میری عمر سات سال ہے، میں قصور میں رہتی ہوں، میں اول جماعت میں پڑھتی ہوں اور مجھے آم بہت پسند ہیں‘‘۔

اپنا تبصرہ بھیجیں